بتایا جائے دس سال میں کتنے وزرانے قرضے لئے اور غیر ملکی دور کئے، چیف جسٹس پاکستان ،تفصیلات طلب   


کو شائع کی گئی۔ June 11, 2018    ·(TOTAL VIEWS 118)      No Comments

اسلام آباد(یواین پی)چیف جسٹس ثاقب نثار نے پاکستانیوں کے بیرون ملک اثاثوں اوراکاو¿نٹس تفصیلات کیس میں گورنر سٹیٹ بینک اور سیکرٹری خزانہ کے پیش نہ ہونے پر اظہار برہمی کیا۔چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بتایاجائے 10سال میں کتنے وزرانے قرضے لئے اورغیرملکی دورے کیے،پتہ ہوناچاہئے ہرپاکستانی کے بیرون ملک کتنے اثاثے اوراکاو¿نٹس ہیں۔پاکستان میں حکومتوں کی غلط پالیسیوں سے ہر نومولودمقروض ہوگیا،بتایاجائے پاکستان کاہربچہ کتنامقروض ہے؟۔تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں بنچ نے پاکستانیوں کے بیرون ملک اثاثوں اور اکاﺅنٹس کے حوالے سے کیس کی سماعت کی ،عدالت نے گورنرسٹیٹ بینک اورسیکرٹری خزانہ کے پیش نہ ہونے پراظہاربرہمی کیا،چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں حکومتوں کی غلط پالیسیوں سے ہر نومولودمقروض ہوگیا، بتایاجائے پاکستان کاہربچہ کتنامقروض ہے؟۔چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ گزشتہ 2 حکومتوں نے کیاکیاتعلیم صحت اورپینے کے پانی کاحال دیکھ لیں،قرضے خودلیتے ہیں اوربوجھ ایسے بچوں پر ڈال دیتے ہیں جوپیدانہیں ہوئے،انہوں نے کہا کہ گورنرسٹیٹ بینک اورسیکرٹری خزانہ کو پرواہ ہی نہیں،شاہ عالم مارکیٹ میں بیٹھے سمگلروں کوکوئی نہیں روک سکاچیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ کون کہتا ہے ہم نے ایمنسٹی سکیم کوردکردیا،معاملہ توہمارے سامنے آیاہی نہیں،جسٹس عمرعطانے چیئرمین ایف بی آرسے استفسارکیا کہ ہمیں ایمنسٹی سکیم سے آگاہ نہیں کیا۔

Readers Comments (0)




Free WordPress Theme

WordPress Themes