جسٹس باقر نجفی کمیشن رپورٹ پرجو فیصلہ بھی آیا قبول کرینگے،خرم نواز گنڈاپور

Published on November 24, 2017 by    ·(TOTAL VIEWS 39)      No Comments


فیصلہ سے نئی عدالتی تاریخ رقم ہو گی، شریفوں نے بہت ظلم کیا اب گرفت کی گھڑی ہے ،میڈیا سے گفتگو
اسلام آباد(یو این پی)پاکستان عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈاپور نے لاہور ہائیکورٹ کی طرف سے جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ پبلک کیے جانے کے بارے میں فیصلہ محفوظ ہونے پر عدالت کے احاطے میں یوا ین پی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ پبلک کرنے کے حوالے سے عدالت جو بھی فیصلہ کرے گی احترام کریں گے اور حصول انصاف کیلئے تمام آئینی، قانونی حق استعمال کرتے رہیں گے۔ شہباز حکومت سانحہ ماڈل ٹاؤن میں براہ راست ملوث ہے ،اعلیٰ عدلیہ اس کیس کی مانیٹرنگ کرے۔ غریب ورثاء کے مقابل گاڈفادر اور سسلین فیملی ہے ۔شہداء کے ورثاء سانحہ ماڈل ٹاؤن کے قاتلوں سے آئین، قانون اور شریعت کے مطابق انصاف بشکل قصاص چاہتے ہیں ۔ جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ پبلک ہونے سے صرف قاتل خوفزدہ ہیں، اس موقع پر عوامی تحریک کے وکلاء نعیم الدین چودھری ایڈووکیٹ، جواد حامد، محمد ناصر اقبال ایڈووکیٹ و دیگر رہنما موجود تھے۔ اسلام آباد میڈیا سیل سے جاری ہونے والی پرس ریلیز کے مطابق خرم نواز گنڈاپور نے کہا کہ شہباز حکومت سانحہ ماڈل ٹاؤن میں براہ راست ملوث اور سانحہ کی فریق ہے اس لیے ہماری عدالت سے ہمیشہ یہ استدعا رہی ہے کہ انصاف کی فراہمی کے بنیادی حق کو قاتل اور غاصب حکمرانوں کی صوابدیدپر نہ چھوڑا جائے اور مظلوموں کے ساتھ پورا انصاف ہونا چاہیے۔ ن لیگ سیاسی جماعت نہیں مفاد پرست عناصر کا ایک شیطانی ٹولہ ہے جس کے نزدیک آئین، قانون ،عدلیہ ،انصاف ،اخلاقیات کی کوئی حیثیت نہیں۔ خرم نواز گنڈاپور نے کہا کہ پنجاب حکومت کے وکلاء نے شہباز شریف کااصل منصوبہ عدالت کے فلور پر بے نقاب کر دیا۔حکومتی وکلاء کا کہنا ہے کہ حکومت رپورٹ پبلک نہیں کرنا چاہتی اور نہ ہی عدالت اس کا حکم دے۔ انہوں نے کہا کہ کرپٹ اشرافیہ ظلم کرنے کے ساتھ ساتھ عدالتوں کو دھمکیاں بھی دے رہی ہے، عدالتیں آزاد ہیں ،ہم سمجھتے ہیں جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ کے فیصلہ سے ایک نئی عدالتی تاریخ رقم ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ جب تک تحریک منہاج القرآن اور عوامی تحریک کا ایک بھی رہنما اور کارکن زندہ ہے آخری سانس تک اپنے شہید کارکنوں کا قصاص مانگتا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ شریف برادران نے بہت ظلم کر لیا ،بے گناہوں کا خون بہا لیا اب ان کی گرفت کی گھڑی ہے اور یہ کسی صورت گرفت سے بچ نہیں پائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی وکلاء کہتے ہیں شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء نے جہاں ساڑھے تین سال انتظار کر لیا مزید چند سال اور کر لیں یہ تجویز نہیں بے حسی ،بے حمیتی اور سفاکیت کی انتہا ہے۔ حکومتیں آئین اور قانون پر عملدرآمد کرنے، کمزوروں کو انصاف دینے اور ظالموں کو کیفر کردار تک پہنچانے کیلئے منتخب کی جاتی ہیں ۔ انصاف کے راستے کا بھاری پتھر نہیں بنتیں۔

Readers Comments (0)




Premium WordPress Themes

Free WordPress Themes