خواب نگر   


کو شائع کی گئی۔ April 21, 2018    ·(TOTAL VIEWS 103)      No Comments

شمیلہ خورشید مغل شمائل، نیلم ویلی آزاد کشمیر
اک عمر جو ھم نے گزاری ھے
کچھ چہرے دھندلے دھندلے سے
کچھ عکس اپنے پرائے سے
کچھ خواب تھے
کچھ سائے سے
کچھ یادیں حسین لمحوں کی
کچھ باتیں سنگین لمحوں کی
کچھ خطائیں تھیں معصوم
کچھ سزائیں جان لیوا
کچھ خواب ادھورے ادھورے سے
کچھ شوق ٹوٹے ٹوٹے سے
کچھ چہرے کھلے حقیقتوں کے
کچھ چہرے دھلے اپنیتوں کے
کچھ جھوٹی یادیں ھیں۔۔
کچھ شکوے ھیں فریادیں ھیں
کچھ اشک تھے بہاے 
کچھ ابھی بہانے ھیں
کہ
بس یہی خواب نگر کی کہانی ھے

Readers Comments (0)




Free WordPress Themes

WordPress主题