سیاسی مداخلت، سپین کے فٹبال ورلڈ کپ 2018 سے باہر ہونے کا خدشہ   


کو شائع کی گئی۔ December 17, 2017    ·(TOTAL VIEWS 201)      No Comments

زیورچ( یواین پی ) فٹبال کی عالمی گورننگ باڈی فیفا نے سیاسی مداخلت کے سبب سپین کو ورلڈ کپ 2018 سے باہر کردینے کی دھمکی دے دی۔جبکہ وزیراعظم سپین نے کہا ہے کہ انہیں فیفاکی جانب سے ایساکوئی خط نہیں ملا۔غیرملکی میڈیا کے مطابق فیفا نے ایک مراسلہ سپینش فٹبال فیڈریشن کو لکھ بھیجا ہے جس میں واضح کیاگیا ہے کہ سیاسی مداخلت کے سبب سپین کو آئندہ برس روس میں شیڈول میگا ایونٹ سے معطل کیا جاسکتا ہے۔اس سے قبل سپینش وزیراعظم ماریانو ریجوئے نے کہا تھا کہ اسپین کو فیفا سے ایسا کوئی خط موصول نہیں ہوا ہے، یہ معاملہ سپینش فٹبال فیڈریشن کی صدارت کی وجہ سے نمایاں ہوا ہے۔
فیفا اور یوئیفا میں بھی سینئر پوزیشنز پر رہنے والے ینجل ماریا ویلار نے جولائی میں ملکی فٹبال کی صدارت چھوڑدی تھی، انہیں فنڈز میں خورد برد کرنے پر گرفتار بھی کیاگیا تھا، ویلار کی جگہ عبوری طور پر جوآن لوئس لاریا کو سامنے لایا گیا تھا، اگرچہ وہ قائم مقام ہیں لیکن انہوں نے کہا ہے کہ وہ 2020 تک ویلار کی مقررہ مدت تک سپینش فٹبال کے چیف بنے رہنا چاہتے ہیں، اس پر سپینش نیشنل اسپورٹس ایجنسی نے بھی اعتراض کیا تھا، جس پر فیفا نے انہیں وارننگ جاری کی ہے۔

Readers Comments (0)




WordPress Blog

Free WordPress Theme