سید مصطفی کمال کا کراچی میں پے در پے عمارتوں کے زمین بوس ہونے پر شدید تشویش کا اظہار   


کو شائع کی گئی۔ September 17, 2020    ·(TOTAL VIEWS 32)      No Comments

کراچی(یواین پی) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کراچی میں پے در پے عمارتوں کے زمین بوس ہونے پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سندھ حکومت کے ماتحت وہ ادارہ ہے جو عوام کی اہلیان کراچی کی جان و مال کی قیمت پر سندھ حکومت کیلئے پیسہ کمانے کی مشین بنا ہوا ہے۔آج بھی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے انتظامی معاملات پاکستان کی بااثر سیاسی شخصیات کے فرنٹ مین منظور کاکا بیرون ملک سے چلا رہے ہیں۔ 2013 میں وزیراعلی نے ایک میٹروپولیٹن شہر کی کراچی بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو صوبے کی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں ضم کرکہ غیر مقامی کرپٹ افراد کے کنٹرول میں دے دیا گیا۔ 12 سالوں میں پیپلز پارٹی کی ناعاقبت اندیش کرپٹ حکومت نے شہر کے تمام گھروں کو فلیٹوں میں تبدیل ہوگئے، بھاری رشوتوں کے عوض چھوٹے چھوٹے پلاٹوں پر کثیر المنزلہ عمارتیں تعمیر کرنے کی اجازت دے دی گئی۔نتیجتا شہر کے گنجان آباد علاقوں رنچھوڑ لائن، گولیمار، کورنگی، لیاری اور لیاقت آباد سمیت مختلف علاقوں میں پے در پے عمارتوں کے گرنے کے واقعات میں لوگوں کی جان و مال کے نقصان کا سلسلہ جاری ہے۔ان خیالات کا اظہار پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے لیاقت آباد کے معززین کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پارٹی صدر انیس قائم خانی بھی انکے ہمراہ موجود تھے۔کراچی ایک لاچار زخمی کی مانند ہے جسے گدھ نوچ رہے ہیں، چیف جسٹس آف پاکستان اور چیف آف آرمی اسٹاف اس پہلو کا نوٹس لیں۔

Readers Comments (0)




Premium WordPress Themes

Weboy