عازمین حج لبیک اللھم لبیک کی صدائیں بلند کرتے مِنیٰ کی جانب رواں دواں   


کو شائع کی گئی۔ September 22, 2015    ·(TOTAL VIEWS 330)      No Comments

222مکہ مکرمہ (یو این پی ) اسلامی تاریخ کے1428ویں حج کے مناسک آج بروز ( منگل) سے شروع ہوں گے۔ دنیا بھرسے آئے ہوئے14لاکھ سے زائد مسلمان اور سعودی عرب میں مقیم لاکھوں افراد لبیک الھم لبیک کی صدائیں بلند کرتے ہوئے مکہ شہر کے شمال مشرق میں چھ کلومیٹر کے فاصلہ پر واقع وادی منٰی میں قائم خیموں کے شہر میں گزشتہ رات سے ہی پہنچنا شروع ہو گئے جہاں وہ آج ظہر ‘ عصر ‘ مغر ب اور عشاء کی نمازیں ادا کریں گے ۔سعودی حکومت نے لا کھوں مسلمانوں کی طرف سے حج کی ادائیگی کے لئے تمام انتظامات مکمل کر لئے ہیں۔منٰی میں سب حاجیوں کو ان کے معلمین کے ذریعے خیمے الاٹ کر دئیے گئے ہیں۔پاکستان سے ایک لاکھ43ہزار سے زائد عازمین حج مکہ مکرمہ پہنچ چکے ہیں ۔شنا خت میں سہولت کے لئے پاکستانی حاجیوں کے کیمپوں پر پاکستان کے جھنڈے لگا دئیے گئے ہیں ۔پاکستان حج مشن مکہ مکرمہ میں پاکستانی عازمین حج کی معاونت ‘رہنمائی اور فلاح و بہبود کے لئے 1600اہلکاروں پر مشتمل عملہ تعینات کر دیا گیا ہے ۔سعودی ولی عہد وزیر داخلہ اور سپریم حج کمیٹی کے چیئرمین شہزادہ محمد بن نائف نے خبردار کیا ہے کہ سعودی حکومت حج کی حرمت اور عازمین حج کی سیکورٹی کو متاثر کرنے والی کسی بھی سرگرمی اور حج کے اجتماع کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے اور اس موقع پر کسی قسم کی نعرے بازی یا مظاہرے کی اجازت نہیں دے گی ۔ سعودی سیکورٹی فورسز کسی بھی دہشت گرد گروہ یا فرد کا مقابلہ کرنے کی پوری صلاحیت رکھتی ہیں ۔ انہوں نے عازمین حج کو بھی ہدایت کی کہ وہ سیاسی پروپیگنڈہ یا حج کی حرمت کو متاثر کرنے والی کسی بھی سرگرمی میں ملوث نہ ہوں۔انہوں نہ بتایا کہ حج کے موقع پر سیکورٹی اور امن و امان یقینی بنانے کے لئے مکہ مکرمہ او ر مشاعر مقدسہ میں ایک لاکھ سیکورٹی اہلکار تعینات کر دئیے گئے ہیں ۔ سعودی عرب کا محکمہ پبلک سیکورٹی روزانہ ہیلی کاپٹروں اور ہوائی جہازوں کی 100پروازوں کے ذریعے مشاعر مقدسہ کی نگرانی کرکے صورتحال کا جائزہ لے گا ۔گورنر مکہ مکرمہ شہزادہ خالد الفیصل نے حج انتظامات کا جائزہ لینے کے لئے مشاعر مقدسہ کے متعدد دورے کئے ہیں او رحج انتظامات پر اطمینان کا ارظہار کیا ہے ۔ حج کے پانچ دنوں یعنی 8تا 12ذوالحجہ تک منٰی کے خیموں کے شہر میں حاجیوں کی سیکورٹی‘ امن و ا مان برقرار اور ٹریفک رواں دواں رکھنے اور غیر قانونی طور پر سڑکوں اور چوراہوں میں ڈیرے لگا کر آمدورفت میں رکاوٹ پیدا کرنے والوں کو روکنے کے لئے پورے علاقے کو متعدد سیکورٹی سیکٹروں میں تقسیم کر کے ہزاروں سیکورٹی اہلکار تعینات کردئیے گئے ہیں۔ساڑھے تین ہزار اہلکاروں پر مشتمل انسداد دہشت گردی کے خصوصی سکواڈ نے اپنی ذمہ داریاں سنبھال لی ہیں۔پورے علاقے میں پانچ ہزار کلوز سرکٹ کیمرے نصب کر کے چپے چپے کی نگرانی کی جا رہی ہے۔حاجیوں کو مکہ سے منٰی پہنچانے کیلئے ہزاروں بسوں کو اجازت نامے جاری کئے گئے ہیں‘ ان کی بلا رکاوٹ آمدورفت یقینی بنانے کے لئے ٹریفک پلان تشکیل دیا گیا ہے اور گاڑیوں اور پیدل افراد کے لئے علیحدہ علیحدہ ٹنل مختص کی گئی ہیں ، منٰی کی حدود میں پرائیوٹ گاڑیوں کا داخلہ ممنوع قرار دے دیا گیا ہے اور ان کی طرف سے مسافر اتارنے اور چڑھانے پر پا بندی عائد ہے ۔سعودی سیکورٹی فورسز ‘ انسداد دہشت گردی فورس ‘محکمہ صحت‘ ہلا ل احمر‘ شہری دفاع اور دیگر متعلقہ محکموں کے عملے نے اپنی ڈیوٹیاں سنبھال لی ہیں۔ سعودی وزارت صحت کے مطابق لاکھوں عازمین حج کی صحت کی صورتحال مجموعی طور پر تسلی بحش ہے اور حج کے دوران کوئی وبا پھوٹنے کا اندیشہ نہیں تاہم انہیں سانس کے ذریعے پھیلنے والی مختلف بیماریوں سے محفوظ رہنے کے لئے منہ پر ماسک پہننے کی ہدایت کی گئی ہے ۔سعودی وزارت صحت نے حاجیوں کو فوری طبی امداد مہیا کرنے کے لئے ہیلپ لائن قائم کر دی ہے جس کا نمبر937ہے ۔ کسی ایمرجینسی کی صورت میں حاجی اپنے موبائیل فون سے کال یا ایس ایم ایس کر کے مدد طلب کر سکتے ہیں ۔ لاکھوں عازمین حج کو علاج معالجے کی سہولتیں مہیا کرنے کے لیے25ہسپتالوں میں 5200بستر تیار کر لئے ہیں ۔ مختلف مقامات پر 30 ہزار سے زائد افراد پر مشتمل طبی عملہ تعینات کردیا ہے جس میں26ہزار پیرا میڈیکل سٹاف‘4400 میڈیکل افسران اور 441 سپیشلسٹ ڈاکٹر بھی شامل ہیں۔مناسک حج کے پانچ دنوں کے لیے مشاعر مقدسہ میں 141 ہیلتھ سنٹر بنائے گئے ہیں۔ کسی بھی ہنگامی حالت میں مریضوں کو فوری طور پر قریبی ہسپتال پہنچانے کے لئے 100 ایمبولینس تیار رکھی گئی ہیں ۔ مشاعر مقدسہ کے علاقے میں قائم پانچ ہسپتالوں میں علاج معالجے کی سہولتوں کی بہتری کے لیے پانچ کروڑ ریال خرچ کئے گئے ہیں ۔اس کے علاوہ سن سٹروک کے مریضوں کے لئے میدان عرفات کے النور ہسپتال میں خصوصی سنٹر قائم کیا گیا ہے ۔ سعودی ہلال احمر اس حج کے دوران ائیر ایمبولینس سروس شروع کرے گی تاکہ کسی حادثے یا ہنگامی صورتحال میں مریضوں کو فوری طورپر قریب ترین سپیشلائزڈ ہسپتال پہنچا یا جاسکے ۔ اس مقصد کے لئے پانچ ہیلی کاپٹر استعمال کئے جائیں گے جن کے ہوابازوں اور ڈاکٹروں کو خصو صی تربیت دی گئی ہے ۔سعودی ہلال احمر نے رواں حج سیزن کے دوران کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نپٹنے کے لئے اپنی تیاریاں مکمل کر لی ہیں ‘ 152 عارضی ایمرجینسی مراکز قائم کر کے وہاں 510جدید ترین ایمبولینس گاڑیاں مہیا کردیں ہیں۔ ان مراکز پر ایک سو سے زائد سپیشلسٹ ڈاکٹر اور تربیت یافتہ پیرا میڈیکل سٹاف تعینات کیا گیا ہے۔سعودی ہلال احمر نے اپنے تمام اہلکاروں کو پوری طرح چوکس کرنے کے ساتھ ساتھ ابتدائی طبی امداد مہیا کرنے والی ٹیموں کو بھی الرٹ کر دیا ہے ۔ سعودی بوائے سکاؤٹس ایسوسی ایشن کے چار ہزار900 رضا کار بھی مختلف امور میں محکمہ صحت اور بلدیات سمیت دیگر سرکاری محکموں کی معاونت کریں گے‘ مشاعر مقدسہ کے علاقے میں ان کے 20مراکز قائم کئے گئے ہیں ‘ وہ راستہ بھو ل کر بھٹک جانے والے ا ور بالخصوص عمر رسیدہ حاجیوں کو ان کے خیموں تک پہنچانے کے علاوہ ابتدائی طبی امداد بھی مہیا کریں گے۔حج کے موقع پر مشاعر مقدسہ میں درمیانے درجے کی بارش کی پیش گوئی کی گئی ہے ۔سعودی محکمہ شہری دفاع نے سیلاب یا کسی بھی اور ہنگامی صورتحال سے نپٹنے کے لئے اپنا پلان وضع کر لیا ہے اور تین ایمرجینسی کیمپ قائم کر دئیے ہیں ‘ مشاعر مقدسہ میں گیس سلنڈر کے استعمال پر پابندی عائد کردی گئی ہے او رخلاف ورزی کرنے والوں کو سخت سزا دی جائے گی ۔ پورے علاقے کو 9 انتظامی زونوں میں تقسیم کر کے 25ہزار اہلکار تعینات کردئیے ہیں جنہیں ہر وقت چوکس رہنے کی ہدایت کی ہے ۔مختلف مقامات پر سیکورٹی کیمرے نصب کئے گئے ہیں‘19ہیلی کاپٹر‘ آگ بھجانے والے 450یونٹ اور تین ہزار سے زائد بھاری مشینیں کسی بھی طرح کی صورتحال سے نپٹنے کے لئے موجود ہیں۔

Readers Comments (0)




Free WordPress Themes

Weboy