قاتل اور جیل سے فرار ہونے والا خطرناک مجرم صدی احمد اپنے ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک   


کو شائع کی گئی۔ May 22, 2020    ·(TOTAL VIEWS 34)      No Comments

اوکاڑہ (یو این پی )خوف اور دہشت کی علامت،متعدد افراد کا قاتل اور جیل سے فرار ہونے والا خطرناک مجرم صدی احمد اپنے ساتھیوں کی فائرنگ سے مارا گیا،ہلاک ملز م متعدد سنگین مقدمات کا ریکارڈ یافتہ ہے،سینئر وکیل امجد وٹو سمیت متعدد افراد کا قاتل ہے۔اوکاڑہ سمیت ساہیوال اور لاہور پولیس کو بھی مطلوب تھا۔تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی دیپالپور پولیس معمول کی گشت پر تھی کہ تین کس نامعلوم ملزمان بسواری موٹر سائیکل کو روکنے کی کوشش کی تو انہوں نے پولیس پر اندھا دھند فائرنگ کر دی۔پولیس نے بھی حق حفاظت کے تحت فائرنگ کی اسی دوران ملزمان موٹر سائیکل سے اتر گئے اور فائرنگ کا سلسلہ جاری رکھااپنے ساتھیوں کی فائرنگ سے ایک نامعلوم ڈاکو زخمی ہو گیا جبکہ دونامعلوم ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے زخمی ہونے والے ڈاکو کو برائے علاج معالجہ ٹی ایچ کیو ہسپتال منتقل کیا جارہا تھا جو زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستہ میں ہی دم توڑ گیا ہلاک ڈاکو کی شناخت صدی شیخ سکنہ املی موتی کے نام سے ہوئی ملزم صدی احمدنے چار لوگوں کوناحق قتل کیا جس میں دیپالپور بارایسوسی ایشن کے سابقہ صدر امجدوٹو کا قتل بھی شامل ہے انتہائی خطرناک ملزم صدی احمد چند روز قبل سنیٹر ل جیل ساہیوال سے فرار ہوگیاتھاملزم صدی احمد قتل، ڈکیتی، رابری جیسی سنگین وارداتوں میں اوکاڑہ سمیت ساہیوال اور لاہور پولیس کو مطلوب تھافرار ہونے والے ڈاکوؤں کی گرفتا ری کے پولیس ٹیم ملزمان کا تعاقب کررہی ہے سول سوسائٹی نے صدی جیسے خطرناک ڈاکو کی ہلاکت پر اوکاڑہ پولیس کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ اوکاڑہ پولیس نے ہمیشہ اوکاڑہ کی عوام کی جان ومال کا تحفظ کے لیے دلیر ی اور بہادری کا مظاہر ہ کیا ہے۔ڈی پی او اوکاڑہ عمرسعید ملک نے خطرناک ڈاکو کی ہلاکت پر پولیس پارٹی کو شاباش دیتے ہوئے نقد انعام اور تعریفی سرٹیفکیٹ دینے کا اعلان کیا۔

Readers Comments (0)




Premium WordPress Themes

Weboy