موجودہ وزیراعظم نے2009ء میں آزاد بلوچستان کا نعرہ لگانے والوں کی حمایت کی، اخترمینگل   


کو شائع کی گئی۔ November 1, 2020    ·(TOTAL VIEWS 51)      No Comments

کوئٹہ (یواین پی) بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کے مرکزی رہنماء اختر مینگل نے کہا ہے کہ موجودہ وزیراعظم نے2009ء میں آزاد بلوچستان کا نعرہ لگانے والوں کی حمایت کی، عمران خان نے لندن کیس میں ہیربیار مری کی بےگناہی کی ویڈیو لنک کے ذریعے گواہی دی تھی کہ بلوچستان میں جو مظالم ہورہے ہیں، اگر ہیربیار کی جگہ میں ہوتا تو یہ ہی کہتا۔انہوں نے 28 اکتوبر کو قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ مجھے اندازہ نہیں تھا کہ پی ڈی ایم اتنی چھا جائے گی کہ ایک معزز وزیر صاحب پی ڈی ایم کے خلاف قرارداد لائے ہیں۔ محمود خان اچکزئی اس ایوان کا حصہ رہے ہیں ان کا نام لیکر توہین کی گئی۔ اردو ہماری قومی زبان ہے۔ جو زبانیں اس ملک میں بولی جاتی ہیں ان کا بھی احترام ہونا چاہیے۔کہا جا رہا ہے کہ پی ڈی ایم جلسے میں آزاد بلوچستان کے نعرے لگائے گئے۔ اچھا ہوا کسی بلوچ نے یہ نعرہ نہیں لگایا نہیں تو پھانسی لگا دی جاتی۔ یہ الزام شاہ احمد نورانی کے فرزند پر لگایا گیا کہ اویس نورانی نے یہ بات کی ہے۔ہمارے ساتھی اویس نورانی اپنے انٹرویو میں بھی کہا کہ ان کی زبان پھسل گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ آزاد بلوچستان کی باتیں کون کررہا ہے۔ہربیارمری جو رکن اسمبلی رہے، نواب اکبربگٹی کے نواسے برہمداغ بگٹی جو صوبے کے گورنر، وزیراعلیٰ بھی رہے، ڈاکٹر اللہ نظر جو ڈاکٹر تھے۔ ایک بیان پیش کرنا چاہتا ہوں جمعہ جنوری 2009ء کی بیان ہے۔ یہ بیان پاکستان کے کسی ٹی وی چینل پر نہیں ہے۔ ہربیار مری پرجب لندن میں دہشتگردی اور بلوچستان کی آزادی کے حوالے کیس چل رہا تھا، ان کی گواہی موجودہ وزیراعظم عمران خان نے دی تھی۔

Readers Comments (0)




Free WordPress Themes

WordPress主题