وفاقی حکومت کی جانب سے ہمیں مسلسل ٹارگیٹ کیا جا رہا ہے‘مراد علی شاہ   


کو شائع کی گئی۔ March 17, 2019    ·(TOTAL VIEWS 79)      No Comments

حیدرآباد(رپورٹ*جنید علی گوندل)وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے ہمیں ٹارگیٹ کیا جا رہا ہے جس کی تازہ مثال جام خان شورو کی ضمانت کے باوجود بھی انہیں راستے میں سادہ کپڑوں میں ملبوس مسلح افراد کی جانب سے روک کرانہیں ڈرانا دھمکانا ہے کیونکہ بعد میں معلوم ہوا کہ وہ افراد نیب کے لوگ تھے۔ انہوں نے کہا کہ جس کسی پر ریفرنس ہیں ان سب کے خلاف بلا امتیاز کاروائی کرنے کے بجائے صرف سندھ میں گرفتاریاں کی جا رہی ہیں جبکہ علیم خان کو بھی دکھاوے کیلئے گرفتار کیا گیا اور شاید جلد انہیں ضمانت پر رہا بھی کر دیا جائے ۔ وہ آج ٹنڈو محمد خان میں رکن صوبائی اسمبلی عبد الکریم سومرو کے بھتیجے کی شادی کی تقریب میں شرکت کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے باتیں کر رہے تھے۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ نیب کی ان ہی کاروائیوں کی وجہ سے صورتحال تشویش ناک ہو گئی ہے اور گذشتہ روز ایک ریٹائرڈ برگیڈیئر نے نیب ریفرنس میں نام آنے کے بعد خود کشی کر لی ۔ایک سوال کے جواب میں وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ وفاقی حکومت کو سندھ میں کوئی دلچسپی نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان دو مرتبہ کراچی آئے مگر این ایس سی کے مطابق سندھ کے 116ارب روپے ابھی تک وفاق نے ادا نہیں کیے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں پانی کے مسئلے پر پچھلے سال اپریل میں ایک کمیٹی تشکیل دی گئی تھی جس کا وہ بھی حصہ تھے اور انہوں نے سندھ کے مسائل کمیٹی کے سامنے پیش بھی کیے مگر اس ضمن میں کوئی پیش و رفت نہیں ہوئی ۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ آئین کے مطابق جہاں سے قدرتی گیس نکلتی ہے پہلا حق بھی اس پر وہاں کے لوگوں کا ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ضلع ٹنڈو محمد خان قدرتی گیس جیسے معدنی وسائل سے مالا مال ہے اور ہم نے گیس کی کمی کے مسئلے پر ہر فورم پر آواز اٹھائی ہے اور پی پی پی چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے بھی اس ضمن میں بہت سخت مؤقف رکھا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کے عوام نے وفاقی حکومت کو مسترد کیا ہے اور کہا کہ ہم سندھ کے حقوق لینے کیلئے جدوجہد جاری رکھیں گے ۔ ایک دوسرے سوال پر انہوں نے کہا کہ منی لانڈرنگ کا کیس سندھ کا ہے مگر اسے راول پنڈی منتقل کرنا سمجھ سے بالا تر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ راول پنڈی سے ہماری اچھی یادیں نہیں رہی ہیں کیونکہ شہید ذوالفقار علی بھٹو اور شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی شہادتیں بھی راول پنڈی میں ہی ہوئیں تھیں ۔ تقریب میں رکن قومی اسمبلی سید نوید قمراور پی پی پی سندھ کے صدر نثار احمد کھوڑو بھی موجود تھے۔ 
کرائس چرچ کا واقعہ انہتائی دلخراش ہے‘ خالد محمود آرائیں
حیدرآباد(رپورٹ*جنید علی گوندل)ترجمان چوہدری نثار ہاؤس و سابق ضلعی نائب صدر پاکستان مسلم لیگ ن خالد محمود آرائیں کا کرائس چرچ واقعہ پر اظہار افسوس۔ کرائس چرچ کا واقعہ انہتائی دلخراش ہے بے گناہ نمازیوں کے فائرنگ کرکے شہید کردیا ‘جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے اسلام دشمن طاغوتی قوتیں تسلسل کے ساتھ مسلمانوں کا عرصہ حیات تنگ کئے ہوئے ہیں اس سے قبل بھی دنیا کے مختلف ممالک میں مسلمانوں کی عبادت گاہوں کومسلسل دہشت گردی کا نشانہ بنایا گیا ہے ‘ جبکہ عالمی میڈیا سمیت عالمی ادارے اس دہشت گردانہ کاروائی کو ایک ذہنی مریض شخص کی معمولی کاروائی قرار ہے جو کہ اہل اسلام کیلئے نا قابل قبول ہے ‘انہوں نے کہا کہ یور پ میں اسلام فوفیا کے سبب ایسی کاروائیوں میں روز بروز اضافہ ہوتا نظر آرہا ہے انہوں نے کہا کہ مسلم حکمراں بیدار ہوں مسلمانوں کی جان و مال عزت و آبرواور شعائر اسلام کے تحفظ کیلئے ٹھوس لائحہ عمل ترتیب دیں انہوں نے کہا کہ اس دہشت گردی کی روک تھام اور دنیا بھر میں مسلمانوں کے تحفظ کیلئے او آئی سی سرجوڑ کر بیٹھے اور مسلم اتحاد کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے مسلمانوں کی بقاء اور تحفظ کیلئے ٹھوس اور مربوط لائحہ عمل ترتیب دے تاکہ مسلمان سکھ کا سانس لے سکیں۔
اینٹی انکروچمنٹ سیل نے انسدادبل بورڈز آپریشن کے دوران سٹی کے مختلف علاقوں میں پبلک مقامات پر لگے مزید 50سے زائد بل بورڈز کاٹ دئیے
حیدرآباد(رپورٹ*علی رضا رانا)اینٹی انکروچمنٹ سیل نے انسدادبل بورڈز آپریشن کے دوران سٹی کے مختلف علاقوں میں پبلک مقامات پر لگے مزید 50سے زائد بل بورڈز کاٹ دئیے،سیاسی جماعت سے وابستگی رکھنے والی بل بورڈز مافیا کی عملے کو سنگین نتائج کی دھمکیاں ،کاروائی کے دوران اینٹی انکروچمنٹ فورس،ڈسٹرکٹ وٹریفک پولیس کی بھاری نفری موجود رہی ،کنٹونمنٹ بورڈزاورٹاؤن کمیٹی قاسم آبادکی حدود میں انسدادبل بورڈز آپریشن شروع نہیں کیاجاسکا،تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان کے پبلک مقامات،رہائشی وکمرشل عمارات ،تجارتی مراکزسمیت دیگر تمام مقامات سے بل بورڈز ہٹانے کے احکامات کی روشنی میں سٹی کے علاقوں میں جاری انسدادبل بورڈز آپریشن کے دوران اینٹی انکروچمنٹ سیل بلدیہ نے ڈائریکٹر توحیداحمد کی سرکردگی میں مزید 50سے زائد چھوٹے بڑے بل بورڈز کاٹ دئے ،عملے نے کاروائی کاآغاز اسسٹنٹ کمشنر سٹی فراز احمد صدیقی کی نگرانی میں سوسائٹی چوک سے متصل پریس کلب روڈ سے کیاجہاں گورنمنٹ ہائی اسکول کوارٹرکی دیوار کے ساتھ سڑک اورکچراکنڈی پر لگے بل بورڈز کو کاٹ کر تحویل میں لے لیاگیا،اسی طرح ہوش محمدشید ی روڈ،فوجداری روڈ،الرحیم شاپنگ سینٹر،پولیس لائن ،سرفراز چڑھائی ،لیبرٹی،مارکیٹ ٹاور،تلک چاڑی ،نذرت کالج سمیت دیگر علاقوں میں لگے تما م بل بورڈز کو کاٹ دیاگیاجبکہ رہائشی وکمرشل عمارتوں پر لگے بل بورڈز کو کاٹنے کیلئے بھاری مشنری طلب کرلی گئی ہے ،الرحیم شاپنگ سینٹراورپولیس لائن کے اطراف لگے بل بورڈز کو کاٹنے کے دوران حکمراں جماعت کے علاقائی رہنماء کی جانب سے عملے کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں گئیں اورمہلت حاصل کرنے کی کوشش کی گئی ،مگر عملے نے پولیس کی بھاری نفری کی موجودگی میں کاروائی مکمل کی ،کاروائی کے دوران ڈی ایس پی ٹریفک احمد قریشی ،ڈی ایس پی سٹی ایوب درانی سمیت دیگر افسران واہلکاروں کی بھاری جمعیت موجود رہی جبکہ دوسری طرف کنٹومنٹ بورڈز اورقاسم آباد کے تمام علاقے تاحال بل بورڈز کے جنگل بنے ہوئے ہیں اورعدالت عظمی کے احکامات پر مہلت ختم ہونے کے باوجود اب تک عملدرآمد نہیں کیاگیا ہے اوربعض مقامات پر ابھی چھوٹے بڑے بل بورڈز کی تنصیب کا سلسلہ جاری ہے ،ڈویژنل کمشنر محمد عباس بلوچ اورڈپٹی کمشنر سید اعجاز علی شاہ نے اینٹی انکروچمنٹ سیل اورڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن کے تمام افسران کو عدالت عظمی کے احکامات پر اس کی روح کے مطابق عملدرآمد کرنے کی ہدایت کی ہے ،اورپولیس افسران کو اینٹی انکروچمنٹ سیل کو فول پروف سیکورٹی فراہم کرنے کا حکم دیا ہے ،تاکہ کسی بھی ممکنہ مزاحمت پر قانونی کاروائی عمل میں لائی جاسکے۔
محکمہ جنگلی حیات کے عملے نے ٹنڈوجام کے قریب چھاپہ مارکر غیرقانونی طورپر نایاب نسل کے تیتر ، جنگلی طوطے اور نایاب برآمد
حیدرآباد(بیورو رپورٹ)محکمہ جنگلی حیات کے عملے نے ٹنڈوجام کے قریب چھاپہ مارکر غیرقانونی طورپر نایاب نسل کے تیتر ، جنگلی طوطے اور نایاب برآمد کرکے ایک شخص کو گرفتار کرنے کے بعد اس سے ہزاروں روپے جرمانہ وصول کیا۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ جنگلی حیات حیدرآباد کے آفیسر مکیش کمار اور ان کی ٹیم کے ارکان جاوید مہر نے عملے کے ساتھ ٹنڈوجام کے قریب چھاپہ مارکر وقاص سلیم نامی شخص کو گرفتار کیا اور اس کے قبضے سے سفید اور کالے تیتر ، جنگلی طوطے برآمد کرکے اس سے جرمانہ وصول کرلیا۔ محکمہ جنگلی حیات کے افسران کا کہنا ہے کہ ماہ فروری میں اسی طرح مختلف افراد سے غیرقانونی نایاب نسل کے پرندے برآمد کرکے ان سے 32ہزار روپے جرمانہ وصول کیا گیا تھاجن میں محمد غوث اور دیگر شامل ہیں۔ جاوید مہر کا کہنا ہے کہ شہر میں نایاب نسل کے پرندوں کیخلاف کریک ڈاؤن جاری ہے اور جلد مختلف علاقوں میں چھاپے مارے جائیں گے۔
حیدرآباد پریس کلب پر مختلف تنظیموں اور افراد نے اپنے مطالبات کی حمایت میں الگ الگ مظاہرے کئے۔گو رنمنٹ سیکنڈ ری ٹیچر ز ایسو سی ایشن (گسٹا ) سندھ کی جانب سے محکمہ تعلیم میں مینجمنٹ کیڈ ر کے نفاذ کیخلاف حیدرآباد پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ
حیدرآباد(بیورو رپورٹ)حیدرآباد پریس کلب پر مختلف تنظیموں اور افراد نے اپنے مطالبات کی حمایت میں الگ الگ مظاہرے کئے۔گو رنمنٹ سیکنڈ ری ٹیچر ز ایسو سی ایشن (گسٹا ) سندھ کی جانب سے محکمہ تعلیم میں مینجمنٹ کیڈ ر کے نفاذ کیخلاف حیدرآباد پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ جس سے مر کزی صدرحاجی محمد اشرف خا صخیلی، فر خند ہ راجپو ت ،منیر احمد ہا لیپو ٹہ اور دیگر نے اپنے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ مینجمنٹ کیڈ ر نئے تعلیمی نظا م ہمیں کسی بھی صورت میں منظور نہیں ہے یہ نظام اساتذ ہ کا معاشی قاتل ہے اور سندھ کی تعلیم کو تبا ہ کر نے کا انتظا م ہے جس کی وجہ سے پو رے سندھ کے اساتذ ہ سراپا احتجاج ہیں،انہوں نے کہا کہ اگر ہما رے جا ئز مطا لبا ت تسلیم نہ کئے گئے تو تمام امتحا نا ت کا با ئیکا ٹ کیا جا ئے گا اور 28ما رچ کو سندھ بھر کے اساتذہ متحد ہو کر کر اچی پر یس کلب سے وزیر اعلیٰ ہا ؤ س تک ما رچ کر یں گے اور وزیر اعلیٰ ہا ؤ س پر دھر نا دیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری حکومت سندھ پر عائد ہو گی،انہوں نے اساتذ ہ کے مطالبا ت دھر اتے ہو ئے مطالبہ کیا کہ مینجمنٹ کیڈر کو فوری ختم کیا جائے، این ٹی ایس،آئی بی اے سندھ اور اقراء یو نیو رسٹی پا س اساتذ ہ کو پہلے دن سے سنیا رٹی دی جا ئے اور 2012ء کے اساتذ ہ کو تنخو اہیں ادا کی جا ئیں ۔ میونسپل ٹاون کمیٹی جامشورو کے ملازمین نے خاتون کونسلر وزیرا ں کے سسر جبل جمالی کی جانب سے ٹاؤن کمیٹی آفس میں داخل ہوکر عملے سے بداخلاقی کرنے اور دھمکیاں دینے سمیت پولیس کی جانب سے این سی داخل کرنے کے باوجود ملزم کو گرفتار نہ کئے جانے کیخلاف حیدرآباد پریس کلب کے سامنے ٹاؤن کمیٹی آفس کے سپریٹنڈنٹ فیض علی جتوئی ،حبیب اللہ بلیدی، غلام شبیر ملاح اور دیگر کی قیادت میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، اس موقع پر مظاہرے میں شریک ملازمین ملزم جبل جمالی کے خلاف سخت نعرے بازی کرتے ہوئے اس کی گرفتاری کا مطالبہ کر رہے تھے، رہنماؤں نے اپنے خطاب میں بتایا کہ خاتون کونسلر وزیر اں کے سسر جبل جمالی نے ٹاؤن کمیٹی کے ملازمین کی زندگی اجیرن بنا رکھی ہے اور کسی نہ کسی بہانے روزانہ آفس میں داخل ہو کر عملے سے بداخلاقی کا مظاہرہ کرتا ہے اورچند روز قبل جبل جمالی نے آفس میں آکر سرٹیفکیٹ بنانے کے بہانے آفس کے عملے دھمکیاں دیں اور نازیبا الفاظ استعمال کئے جس پر ملازمین نے جامشورو تھانہ پر اس کے خلاف این سی بھی داخل کرائی ہے لیکن پولیس ملزم کو گرفتار کرنے کے لئے تیار نہیں ہے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ خاتون کونسلر کے سسر جبل جمالی کو گرفتار کر کے ملازمین کو تحفظ اور انصاف فراہم کیا جائے۔کو ٹر ی کی ٹیکسٹائل مل میں گذ شتہ 10سالوں سے کا م کر نے والے مز دور علی ڈھگن نے مل انتظامیہ کی جانب سے گریجویٹی اور پنشن کی رقم ہڑ پ کر نے کی کو شش کے خلاف حیدرآباد پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ،اس موقع پر انہوں نے صوبا ئی وزیر محنت سے اپیل کی کہ معاملے کا نوٹس لیکر امین ٹیکسٹا ئل مل سے بقایا تنخو اہ اور گریجو یٹی کی رقم دلو اکر مجھے انصاف فراہم کیا جا ئے ۔انہوں نے بتایا کہ وہ سال 2009ء سے مذکورہ مل کے کلر ڈپا رٹمنٹ میں کا م کر ر ہا ہے اور گذ شتہ پا نچ ما رچ 2019کو 60سال کی عمر ہو نے پر مل انتظا میہ نے مجھے نو کر ی سے برطر ف کر دیا اور پنشن کے خا لی فارم پر دستخط کر نے کیلئے کہا اور میں نے پنشن کی رقم معلو م کر نے کیلئے کہا تو انہو ں نے رقم بتا نے سے انکار کیا اور میر ا مل میں داخلہ بند کر دیا ،انہو ں نے بتا یا کہ میر ی گر یجو یٹی کی رقم 2سے ڈھا ئی لا کھ روپے ہے اور مل انتظا میہ مجھے صر ف 1لا کھ روپے دے کر روانہ کر نا چاہتی ہے ،انہو ں نے بتا یا کہ میر ے پا نچ بچے ہیں اور میں ہیپا ٹا ئٹس کے مر ض میں مبتلا ہو ں اور مل میں جو لیبر آفیسر مقر ر ہے وہ بھی مل انتظا میہ کی مزدور دشمن پا لیسی پر عمل پیر ا ہے ۔حیدرآباد کے سائٹ کے علا قے میں واقع بالی وڈ شاپنگ ما ل اور گل ٹر یڈر س سروس میں صفائی ستھر ائی کا کام کر نے والے ملازمین نے ٹھیکیدار کی جانب سے تنخو اہیں نہ دینے کے خلاف حیدرآباد پر یس کلب کے سامنے احتجاجی مظا ہر ہ کیا ۔ اس موقع پر راول ٹھاکر ،نا ہید علی اور مومجی با ئی سمیت دیگر ملازمین نے بتا یا کہ ہم گذ شتہ کئی سالوں سے با لی وڈ شاپنگ ما ل اور گل ٹر یڈ رس میں صفائی ستھر ائی کا کام کر ر ہے ہیں لیکن ہمیں ٹھیکیدار ریا ض گل کی جانب سے ہمیں تنخو اہیں نہیں دی جا رہی ہیں جبکہ ہماری 14ہز ار روپے کی تنخو اہ میں کٹو تی کرکے صرف 9ہزار روپے دےئے جا تے ہیں اور وہ بھی گذ شتہ دو ما ہ سے ادا نہیں کےئے جا رہے ہیں ،انہو ں نے بتا یا کہ تنخو اہیں نہ ملنے کے سبب ہمارے گھر وں میں فاقہ کشی جیسی صورتحا ل ہے اور تنخو اہوں کیلئے احتجاج کر نے پرہمیں مختلف طر یقوں سے ہر اساں کیا جا رہا ہے ،انہو ں نے ارباب اختیا ر سے مطا لبہ کیا کہ معاملے کا نو ٹس لیکر ہما ری تنخو اہیں جا ری کرائی جا ئیں اورہمیں انصاف فراہم کیا جا ئے ۔ دادو کے رہا ئشی گنے کے آباد گارامان اللہ انصاری نے نیو دادو شوگر مل کی انتظامیہ کی جانب سے گنے کی مد میں بقایاجات کی رقم ادا نہ کئے جانے کے خلاف حیدر آباد پر یس کلب کے سامنے علامتی بھوک ہڑتال جاری رکھی ،اس موقع پر امان اللہ انصاری نے بتا یا کہ میں دل کی بیما ری میں مبتلا ہو ں اور دو با ر دل کے دورے بھی پڑچکے ہیں اور اب ڈاکٹر وں نے بائی پا س کر انے کیلئے کہا ہے جس کیلئے مجھے بھا ری رقم کی ضرورت ہے لیکن مل دادو شوگر مل پیار و اسٹیشن انتظامیہ کی جانب سے گذ شتہ تین سالوں سے 9لا کھ99ہزار روپے سے زائد رقم ادا نہیں کی جا رہی ہے اور گذ شتہ تین سالوں سے مجھے دلا سے دےئے جا رہے ہیں جبکہ میر ی دل کی بیما ری میں روزبر وز اضا فہ ہو رہا ہے ،انہو ں نے چیف جسٹس آف پاکستان ،پاکستان پیپلز پارٹی کے کو چیئرمین آصف علی زرداری،بلاول بھٹو زرداری اور وزیر اعلی سندھ سے اپیل کی کہ نیو دادو شوگر مل انتظا میہ کی جانب سے گنے کی مد میں میری بقایا رقم دلو ائی جا ئے تا کہ میں علاج بر وقت کراسکوں ۔بلد یہ اعلیٰ حیدرآباد کے جبر ی طر ف کئے گئے ملازم اکبر کی جانب سے نو کر ی پر بحا لی کیلئے پر یس کلب کے سامنے گھر کے بر تن فر وخت کر کے انوکھا احتجاج کیا، اس موقع پربر طر ف ملازم نے الزام عائد کر تے ہوئے بتا یا کہ مجھے بلد یہ کی سی بی اے یو نین کے رہنما ء اکر م راجپوت کی ایما ء پر نو کر ی سے بر طر ف کیا گیا ہے اور یو نین کے رہنما اکر م راجپو ت کی کرپشن ظا ہر کر نے پر مجھے انتقامی کا روائی کا نشانہ بنا یا جا رہا ہے ،انہو ں نے بتا یا کہ چند سال قبل ایک پر انی مو ٹر سائیکل پر گھومنے والا اکر م راجپو ت کے آ ج کر وڑ وں روپے کے اثاثے ہیں جن کی اینٹی کرپشن اور نیب میں انکو ائر ی چل رہی ہے ،انہو ں نے سندھ کے صوبا ئی وزیر بلد یا ت اور میو نسپل کا رپو ریشن حیدرآباد کے افسر ان سے مطا لبہ کیا کہ سی بی اے یونین کے رہنما ء اکر م راجپو ت کی کر پشن کا نو ٹس لیکر مجھے نوکر ی پر بحال کیا جا ئے ۔ کو ٹر ی مہا جر کا لو نی کے رہا ئشی مجید شیخ نے پر اسرار طو ر پر لا پتہ ہو نے والے اپنے بہنو ئی شاہد شیخ کی تلاش میں مدد کیلئے حیدرآباد پر یس کلب کے سامنے پہنچ کر مطا لبہ کیا کہ میر ے بہنو ئی کی تلاش میں ہما ری مدد کی جا ئے ،انہو ں نے بتا یا کہ میر ے بہنو ئی شاہد شیخ کا ذہنی توازن خراب ہے اور وہ کئی با ر سر کاؤس جی اسپتال گد و میں بھی زیر علا ج رہا ہے اور وہاں سے صحت یا ب ہو نے کے بعد گھر آگیا تھا لیکن گذ شتہ 13روز سے پر اسر ار طو ر پر لاپتہ ہے اور کا فی تلاش کے با وجود بھی اُ سکا کچھ پتہ نہیں چل سکا ہے ،انہو ں نے بتا یا کہ بہنوئی کی گمشد گی کے حو الے سے متعلقہ تھا نہ پر بھی اطلاع دی گئی ہے لیکن پو لیس بھی اب تک بہنو ئی کی تلاش میں نا کا م ہے ،انہو ں نے ارباب اختیا رسے اپیل کی کہ بہنو ئی کی تلاش میں ہما ری مدد کی جا ئے ۔

Readers Comments (0)




Free WordPress Themes

Premium WordPress Themes