پتے کی پتھریاں   


کو شائع کی گئی۔ March 3, 2021    ·(TOTAL VIEWS 72)      No Comments

تحریر۔۔۔ڈاکٹر فیاض احمد
پتہ انسانی جسم کا تھیلی نما عضو ہے جو جگر کے داہنے حصہ کی زیریں سطح پر موجود ہوتا ہے یہ تھیلی تقریباً چار انچ لمبی اور ایک انچ چوڑی ہوتی ہے پتہ کی مختلف بیماریاں ہوتی ہیں جن میں پتے کی پتھری بن جانا بھی شامل ہے
پتے کی پتھری کی علامات
پتہ کی پتھری کی علامات کبھی کبھی واضع طور پر ظاہر نہیں ہوتیں ہیں اور اگر بروقت توجہ نہ ملے تو یہ مسائل بڑھ بھی سکتے ہیںپسلیوں کے نیچے دائیں جانب شدید درد ہونا پتے کے مرض کی علامت ہے یہ کبھی ہلکا اور کبھی شدید شکل اختیار کر سکتا ہے متلی اور قے آنا بھی پتہ کی پتھری کی علامت ہو سکتی ہے پتہ کی بیماری میں نظام انہضام صحیح طرح سے کام نہیں کرتا جس کے باعث کچھ کھانے سے متلی محسوس ہوتی ہے بخار کا آنا اور بلڈپریشر کا لو ہو نا پتے کی خرابی کی طرف اشارہ کرتا ہے بخار پتے کے انفیکشن کی علامت بھی ہو سکتی ہے اگر آپ کو ہر تھوڑی دیر بعد حاجت محسوس ہوتی ہے تو یہ بھی پتہ کی بیماری کی ایک علامت ہو سکتی ہے یرقان پتہ کی پتھری اور بیماری کو ظاہر کرتا ہے کبھی کبھار بعض مریضوں میں پتھری کی وجہ سے پس پڑ جاتی ہے اس کی وجہ سے شدید پیٹ درد ہوتا ہے عورتوں اور عمر رسیدہ افراد کو پتے کے مسائل درپیش آنے کے خطرات زیادہ ہوتے ہیں اس کی دیگر علامات میں بد ہضمی ،گیسٹرک پرابلم، کھانے کے بعد پیٹ کا پھول جانا، قبض، سر چکرانا، خون کی کمی، ایکنی اور پھوڑے پھنسیاں نکل آنا شامل ہیں
پتے کی پتھری کے اسباب
اس مرض کے ہونے کا ایک بڑا سبب کاربوہائیڈریٹ خصوصاً چینی وغیرہ کا زیادہ استعمال ہے زیادہ چکنی غذاﺅں سے بھی پتہ کی پتھری اور درد ہو سکتا ہے موٹے لوگ جن کے خون میں کولیسٹرول لیول زیادہ ہوتو اس سے پتے میں پتھریاں بنتی ہیں اگر پتے میں سوزش زیادہ عرصے تک رہہے تو یہ پتھری کا سبب بن سکتی ہے ذیابیطس بھی پتے کی پتھری بن جانے کی صورت میں ہوسکتا ہے
جو لوگ زیادہ ڈائٹنگ کرکہ جلدی وزن کم کر لیتے ہیں ان کے جگر میں کولیسٹرول پیدا ہونے لگتا ہے جس سے پتے کے مسائل ہو سکتے ہیں بھوکا رہنے سے پتے کی کارکردگی متاثر ہو جاتی ہے
احتیاط و تجاویز
پتے کی پتھری اگر زیادہ بڑی ہو جائے تو آنت کا منہ بند کر دیتی ہے ایسا کم ہی ہوتا ہے لیکن اگر ہو جاے تو یہ جان لیوا بھی ثابت ہو سکتا ہے اگر پتہ پھٹ جائے اور پتا نہ چلے تو پیٹ میں بڑے پیمانے پر خطرناک انفیکشن پھیل سکتا ہے اس کے خطرات پنتالیس سال سے زائد عمر کے افراد میں زیادہ ہوتے ہیں پتہ میں کینسر بہت کم دیکھنے میں آتا ہے تاہم اگر فوری خیال نہ کیا جائے تو پتے کا مرض کینسر بھی بن سکتا ہے
غذا
پتہ کی پتھری میں مریض کی غذا کا بہت خیال رکھنا چائیے عموماً موٹے لوگ جن کے خون میں کولیسٹرول لیول زیادہ ہے اس سے ان کے پتے میں پتھریاں بنتی ہیں لہذا چربی اور کولیسٹرول بڑھانے والی غذائیں مثلاً انڈہ، مکھن ، گوشت وغیرہ کم کھائیں وزن کم کرنے اور چربی کم ہونے سے باربار ہونے والے درد کا امکان کم ہو جاتا ہے
۔روغن زیتون پتے کی پتھری میں مفید ہے
۔چقندر ، کھیرا اور گاجر تینوں کا تازہ جوس پی لینے سے پتہ صاف ہو جاتا ہے
۔پتھری کی صورت میں مولی کا استعمال بے حد مفید اور زود اثر ہوتا ہے۔

Readers Comments (0)




WordPress主题

Free WordPress Themes