پوٹیٹو گرورز کوآپریٹو سوسائٹیاور کھاد کمپنی کے اشتراک سے آلو کی کاشت اور متوازن کھادوں کے استعمال پر سیمینار   


کو شائع کی گئی۔ October 30, 2020    ·(TOTAL VIEWS 34)      No Comments

اوکاڑہ(یو این پی)پوٹیٹو گرورز کوآپریٹیو سوسائٹی اور معروف کھاد کمپنی کے اشتراک سے آلو کی کاشت اور متوازن کھادوں استعمال پر سیمینار مقامی میرج ہال میں منعقد ہوا سیمینار کے آغاز پر چوہدری ممتاز ناصر نے کاشت کاروں سے خطاب کرتے ہوئے بتایا آپ زمینوں کا تجزیہ کروائیں اور ضرورت کے مطابق کھادیں دیں انہوں نے کہا ہمارے گروپ کے تین پلانٹ ہیں اور ساری کھاد یں ہمارے پاس موجود ہیں چوہدری حفیظ احمد ڈسٹرکٹ ہیڈ سائل نے بتایا کہ ہمارا محکمہ فوری طور پر تجزیہ کی رپورٹ دے دیتا ہے ٹیوب ویل کی رپورٹ ترجیحی بنیادوں پر دی جاتی ہے چودھری محمد مقصود احمد جٹ چئیرمین پوٹیٹو ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ پنجاب،نائب صدر پوٹیٹو گرورز کوآپریٹو سوسائٹی نے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا پوٹیٹو سوسائٹی انیس سو اناسی سے کاشتکاروں کے لیے کام کر رہی ہے بتایا آلو ایک حادثاتی فصل ہے جو بین الاقوامی قحط کے دنوں میں خوراک کی تلاش میں جنوبی امریکہ پیرو کے پہاڑوں میں دریافت ہوا فرانس کی ملکہ اور روس کے صدر نے آلو اگاؤ اور آلو کھاؤ مہم چلائی جس پر کاشت کاروں نے آلو اگائے اور مالی معاشی حالات درست ہوئے اور امن و امان بحال ہوا بتایا آلو پہلے خوراک تھا پھر حکیموں کے پاس چلا گیااس کے بعد شہزادوں کے دستر خوان پر پھر غریبوں کی سبزی بنی اب پھر چاول گندم مکئی کے بعد چوتھی خوراک ہے انہوں نے مزید بتایا بورڈ کے محنتی سائنسدانوں نے آلو کی سات اقسام تیار کی ہیں جو سرکاری کاروائی کے بعد دو سالوں تک کاشت کاروں کو ملنا شروع ہوں گے انہوں نے کہا بیج آلو مہنگے ہیں تسلی کر کے خرید کریں۔ شرکا سے اشفاق جوئیہ پیر نسیم الدین نے بھی خطاب کیا شرکت کرنے والوں میں چوہدری اسلم جاوید میاں اقبال رانا،ڈپٹی ڈائریکٹر انفارمیشن خورشید جیلانی۔ سہیل اکمل نوید مینجر سوسائٹی بھی شامل ہےتقریب کے آخر میں شرکا کے اعزاز میں ظہرانہ بھی دیا گیا۔

Readers Comments (0)




Weboy

WordPress Themes