کوئٹہ میں 100 کلو آٹے کی قیمت میں ہزار روپے اضافہ   


کو شائع کی گئی۔ November 7, 2019    ·(TOTAL VIEWS 30)      No Comments

کوئٹہ: (یواین پی) مہنگائی کا عوام کو ایک اورجھٹکا، کوئٹہ میں 100 کلو گرام آٹے کی قمیت میں ہزارروپے کا اضافہ ہو گیا۔ بلوچستان کا محکمہ خوراک تاحال گندم نہیں خرید سکا۔ملک بھر کی طرح کوئٹہ میں بھی کھانے پینے کی چیزوں کی قیمتوں میں اضافہ معمول بن چکا ہے۔ عام آدمی سبزیوں کے نرخوں میں اضافے کا رونا رو رہے تھے کہ اب گذشتہ ایک ماہ کے دوران 100 کلو گرام آٹے کی بوری 38 سو سے بڑھ کر 48 سو تک جا پہنچی ہے۔شہریوں کا کہنا ہے کہ روز بروز بڑھتی مہنگائی نے ان کے بجٹ کو بہت متاثر کر دیا ہے اور اب تو آٹا بھی غریب آدمی کی قوت خرید سے دور ہوتا نظر آ رہا ہے۔کوئٹہ کے تاجروں کا زیادہ تر پنجاب اور سندھ سے آنے والے آٹے پر انحصار ہے، ان کا کہنا ہے کہ دوسرے صوبوں میں آٹے کے نرخ بڑھنے کی وجہ یہاں بھی اضافہ یقینی ہے اور حکومت کی جانب سے مہنگائی کو لگام نہ ڈالنے کے باعث کاروبار ٹھپ ہونے لگا ہے۔فلور ملز مالکان کا موقف ہے کہ پنجاب حکومت نے صوبے سے باہر گندم لے جانے پر پابندی لگا رکھی ہے۔ سندھ سے آنے والی گندم کافی مہنگی ہے جبکہ بلوچستان کے محکمہ خوراک نے پاسکو سے گندم نہیں خریدی جو مہنگائی کی اصل وجہ ہے۔

Readers Comments (0)




WordPress Themes

Free WordPress Theme