شاعری

بچپن کی کہانی تھی

بچپن کی کہانی تھی ہم نے جو سنائی تھی روتی ہوئی پلکوں سے بہتے ہوئے اشکوں سے تم بھول گئے جاناں تم بھوول گئے جاناں

Continue Reading »

More شاعری

مجھے معاف کر میرے ہم سفر

مجھے معاف کر میرے ہم سفر تجھے چاہنا میری بھول تھی انہی راستوں پر اک نظر تجھے دیکھنا میری بھول تھی کبھی رات سے کبھی

Continue Reading »

خواب نگر

شمیلہ خورشید مغل شمائل، نیلم ویلی آزاد کشمیر اک عمر جو ھم نے گزاری ھے کچھ چہرے دھندلے دھندلے سے کچھ عکس اپنے پرائے سے کچھ خواب تھے کچھ سائے سے کچھ یادیں حسین لمحوں کی کچھ ...

غماں دی اگ وچ سڑنی پئی آں 

ہوکے آہواں بھردی پئی آںوچھڑن والا تاں وچھڑ گیا اے ہن کاہدے توں ڈرنی پئی آنزخماں بھریا اے دل میرانال دُکھاں دے لڑنی پئی آںیاداں اوہدیاں بہت ستاونبن اہدے کی مرنی ...

ہرطرف جیسے بکھر رہا ہے کوئی

غزل ویران اندر سے کر رہا ہے کوئی مجھ سا مجھ میں اتر رہا ہے کوئی وقت سا تحلیل ہوا چاہتا ہے خاموش جان سے گزر رہا ہے کوئی ساتھ چلنے کا وعدہ تو ...

ایک دل خراش نظم

دسمبر ہر سال ایک نیا زخم دے جاتا ہے تم نے خواب سے نکل کر نرم، گرم اوڑھنی اور بچھونے سے نکل کر کبھی درو دیوار کے اس پار چلنے والی ...

پیاری بھابی

اے پیاری بھابی ہمیشہ خو ش و خرم رہنا. سپنوں کے بستے اس گھر میں تم ہمیشہ آباد رہنا. نئی زندگی نیا گھر مبارک ہو آپ کو. شادی مبارک ہو شادی مبارک ہو ...

دسمبر اور شاعری کا تعلق

تحریر ۔۔۔آمنہ رشید۔۔۔ پیر محل لاہور(یو این پی)  عسیویں کینڈر کا باراہوں مہینہ دسمبر ہے دسمبر اپنے ساتھ جاڈے کی خشک شامیں یخ بستہ ہوائیں اور بہیت سی دل کو گرما ...

میں غازی ہوں کہ بچ نکلی محبت کی لڑائی میں

میں غازی ہوں کہ بچ نکلی محبت کی لڑائی میں فقط دل کے تھے کچھ ٹکڑے لٹا آئی دہائی میں مری ساری حیاتی کا بھلا کیا مول دیتے ...

شاعرہ پروین شاکر کا 64واں یوم پیدائش ’’آج‘‘ منایا جائے گا

لاہور(یواین پی)شاعرہ پروین شاکر 24نومبر 1952ءمیں کراچی میں پیدا ہوئیں اورآج ان کی 64ویں سالگرہ ہے۔ وہ خواتین اور نواجونوں کے احساسات کی منفرد شاعرہ تھیں۔ پروین شاکر نے اپنے ...

***غزل***

***غزل*** شاعرہ ۔۔۔ حیا خاں کبھی رخسار پر اشکوں کی صورت میں ٹپکتا ہے کبھی سینے میں وہ بن کر دلِ غمگیں دھڑکتا ہے جگر زخمی ہے میرا اور آ نکھوں ...

تم ہی مجھے دِکھتے ہو

 شاعرہ ۔۔۔حیا خان ۔۔۔۔ کراچی جا بجا تم ہی مجھے دِکھتے ہو سوچوں  میں خیالوں میں چاہت کے حوالوں   میں                         تم ہی مجھے دِکھتے ہو محفل کے چراغوں  میں خلوت میں هزاروں میں                          ...

Next Page »
WordPress Themes