سعودی عرب مشرق وسطیٰ میں چین کا اہم شراکت دار ہے، چینی وزیر خا رجہ

Published on April 18, 2024 by    ·(TOTAL VIEWS 51)      No Comments

 فلسطینی عوام کے جائز قومی حقوق کے ادراک میں ناکامی ہی فلسطین اسرائیل کے مسئلے کی جڑ ہے، وانگ ای
بیجنگ (یو این پی) چینی وزیر خارجہ وانگ ای نے سعودی وزیر خارجہ فیصل بن فرحان السعود کے ساتھ فون پر بات چیت کی۔منگل کے روز وانگ ای نے کہا کہ چین شام میں ایرانی سفارت خانے پر حملے کی سختی سے مخالفت کرتا ہے جو کہ بین الاقوامی قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے، ساتھ ہی ہم نے دیکھا ہے کہ ایران نے کہا ہے کہ اس کے جوابی حملے کا مقصد کسی بھی پڑوسی ملک پر جارحیت نہیں ہے اور وہ ہمسائیگی اور دوستانہ پالیسیوں کو جاری رکھنے کے لیے تیار ہے۔چین سفارتی ذرائع سے مسائل کے حل پر سعودی عرب کی کوششوں کو سراہتا ہے۔وانگ ای نے اس بات پر زور دیا کہ اس وقت اولین ترجیح اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2728 پر سختی سے عمل درآمد کرنا، فوری طور پر غیر مشروط اور دیرپا جنگ بندی کا حصول، شہریوں کو مؤثر طریقے سے تحفظ فراہم کرنا اور انسانی امداد کو یقینی بنانا ہے۔ فلسطینی عوام کی جائز قومی حقوق کے ادراک میں ناکامی ہی فلسطین اسرائیل کے مسئلے کی جڑ اور مشرق وسطیٰ کے مسئلے کا بنیادی سبب ہے۔ مسئلے کو حل کرنے کی سمت یہ ہے کہ “دو ریاستی حل” کو جلد از جلد نافذ کیا جائے، ایک آزاد فلسطینی ریاست قائم کی جائے، فلسطینی عوام کے جائز قومی حقوق کو بحال کیا جائے اور فلسطین اور اسرائیل کے درمیان پرامن بقائے باہمی کو حاصل کیا جائے۔وانگ ای نے کہا کہ سعودی عرب مشرق وسطیٰ میں چین کا اہم شراکت دار ہے۔ چین سعودی عرب کے ساتھ رابطے اور ہم آہنگی کو مضبوط بنانے، دونوں سربراہان مملکت کے درمیان طے پانے والے اہم اتفاق رائے کو عملی جامہ پہنانے، سیاسی باہمی اعتماد کو مسلسل وسعت دینے اور چین-سعودی عرب تعلقات کو اعلیٰ سطح پر لے جانے کے لیے تیار ہے۔

Readers Comments (0)




WordPress主题

Free WordPress Themes